اسلامک وظائف کا انسائکلوپیڈیا اکابرین کی نظر میں



اعلانات

استخارہ

ایک طرف جدید دور کی مادیت پرستی اور دوسری طرف دین کے احکامات سے دوری نے ہمیں کسی بھی معاملہ یا مسئلہ میں فیصلہ کرنے کی صلاحیت سے بالکل محروم کر دیا ہے ۔شادی بیاہ کے مسائل ہوں یا رشتہ کے ردو قبول کا معاملہ ہو ،کاروباری مسائل ہوں یا شراکت کے حوالے سے معاملات ہوں ،بیرونی سفر پر جانا بہتر ہے یا نہیں ، یا کسی کام کو اس وقت شروع کرنا بہتر ہے یا نہیں،جیسے مسائل سے ہر شخص دو چار ہے ۔بندگان خدا کے ان مسائل کے حل کے لیے حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے استخارہ کرنے کی ہدایت فرمائی ہے۔جب دو جائز یا مستحب کاموں میں تردد ہو کہ ان میں سے کس کو اختیار کروں ؟؟؟تو استخارہ کے ذریعے اللہ تعالیٰ سے مدد لی جا سکتی ہے۔بہتر یہ ہے کہ سائل خود استخارہ کرے۔لیکن اگر ایسا نہ تو بندہ ناچیز نے بزرگان دین کے کچھ مجرب استخارے ترتیب دیئے ہیں ۔انہی استخاروں میں سے ایک استخارہ احقر کے پاس حضرت امام غزالی رحمۃ اللہ علیہ کے مجربات میں سے ہے ۔جس کو بڑی محنت اور ریاضت سے حاصل کیا ہے جس کو بندگان خدا کی الجھنوں کو دور کرنے کے لیے استعمال کرتا ہوں ۔اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے ہزار ہا بار میں نے لوگوں کے لیے استخارہ کیا ہے جس کے نتائج اللہ کی مہربانی سے حسب منشاء آئے ہیں ۔یہ خاص استخارہ ہے اس کے نتائج سائل کو ہر صورت میں دل سے قبولل کرنا چاہیں۔عمل نہ کرنے کی صورت میں نقصان کا خدشہ ہے ۔

کسی بھی مقصد کے لیے استخارہ کروانے کے لیے اپنا نام اپنی والدہ کا نام اور جس کام کے لیے استخارہ کروانا ہے لکھ کر ہمیں بھیجیں


آن لائن استخارہ فارم
A value is required.
نام٭
A value is required.Invalid format.
ای میل ایڈریس٭
A value is required.
والدہ کا نام٭
A value is required.
استخارہ

شادی کا استخارہ کروانے کی صورت میں لڑکے کااور اسکی والدہ کانام اور لڑکی اور اسکی والدہ کا نام لکھنا ضروری ہے

To help prevent automated spam, please answer this question

* Using only numbers, what is 10 plus 15?